New Naat Sharif Lyrics | Latest Naat Urdu | Gulshan e Islam Mahka Syed Abrar Se

 Gulshan e Islam Mahka Syed Abrar Se 

Sunte hai ham bas yahi apno se aur agiyaar se
Gulshan e Islam mahka syed abrar se


Haq tala ne banaya hai inhe mukhtar gul
Jab bhi karana ho karo har intja Sarkar se 
Gulshan e Islam mahka syed abrar se
Sar kataya hai unhone karbala ki ret par
aaj hai mahful deene sibte shahe abrar se
Sare ashiqane nabi kahte hai ulfat me yahi
Faiz hashil hai hame ashab ke kirdar se
Apne ho ya gair ho beshaq hakikat hai yahi
Bhik pate hai sabhi aaqa tere darbar se
Sunte hai ham bas yahi apno se aur agiyaar se
Gulshan e Islam mahka syed abrar se
Jab na the sarkar duniya me thi julm har taraf
Aaj hai duniya munnwar sabihe anwar se
Wo zamane me kabhi mayush ho sakte nahi
Jinko nisbat dahar me hai nabiyo ke sardar se
Aur Makta Samat Kare
Sadkaye hassan tujhko bhi nazim mil gaya
midate sarkar jahir hai tere ashaar se 
Gulshan e Islam mahka syed abrar se


سنتے ہیں ہم بس یہی اپنوں سے اور اغیار سے
گلشــنِ اســلام مہکا سیدِ ابرار سے
یانبی ہوں تشنہ لب میں خواب میں آکر کبھی
تشنگی میری بجھادو شربت دیدار سے
حق تعالیٰ نے بنایا ہے انہیں مختار کل
جب بھی کرنا ہو کرو ہر التجا سرکار سے
سر کٹایا ہے انہوں نے کربلا کی ریت پر
آج ہے محفوظ دیں سبطِ شہِ ابرار سے
سارے عشاقِ نبی کہتے ہیں الفت میں یہی
فیض حاصل ہے ہمیں اصحاب کے کردار سے
اپنے ہوں یا غیر ہوں بیشک حقیقت ہے یہی
بھیک پاتے ہیں سبھی آقـا ترے دربار سے
جب نہ تھے سرکار دنیا میں تھی ظلمت ہر طرف
آج ہے دنیـــا منــور صــاحبِ انــوار سے
وہ زمانے میں کبھی مایوس ہو سکتے نہیں
جن کو نسبت دہر میں ہے نبیوں کے سردار سے
صدقۂ حسان تجھ کو بھی ہے “ناظم” مل گیا
مدحت سـرکار ظاہر ہے ترے اشعار سے


Leave a Reply

Close Menu